Search the Community

Showing results for tags 'ghazal'.



More search options

  • Search By Tags

    Type tags separated by commas.
  • Search By Author

Content Type


Blogs

  • Mp3 Music Download (FDF)
  • AB online News
  • Latest Topic of Urdu Poetry (FDF)
  • Men's fashion
  • Poetry Images and wallpaper
  • Homemade Bubble Periodontal Equipment That work well This particular
  • Will we Need to Accelerate Hockey?
  • Real estate agent's Get: A few American footbal teams
  • So how exactly does your National football league Make
  • weishihao
  • shopping
  • cheap lingerie plus size
  • Mets: Familia can pitch inside of 3 toward 4 weeks right after medical procedures
  • Twins mail out Turley for to start with massive-league start out vs. Giants
  • Philadelphia Phillies Opportunity Nick Pivetta Getting to be Respectable MLB Resolution
  • Minnesota Twins vs. Kansas Metropolis Royals Sequence Preview
  • Freese, Cervelli energy Pirates through Braves 5-4 within property opener
  • Dallas Cowboys' 'mutual awareness' within Josh McCown might be 'component' for Tony Romo
  • Are the Atlanta Falcons incredibly tone setters inside the NFC South?
  • Raiders MiniCamp Observations: Amari Cooper Exhibits Out Upon Working day 1
  • Appear Sign up for The Day-to-day Norseman Area!
  • Buffalo Expenditures draft specifications, post FA: offense
  • Pur Glue posses is that clashing
  • Aftermath a college physique Pur Glue
  • Fiber Optic Splice Closure accommodation aural
  • Commercial Condensing Unit are basal apparatus
  • Interfiliere and swimwear manufacturer China
  • wholesale halloween costumes
  • cris
  • pandora princess ring canada
  • While you may consider these pieces are costly
  • Afresh Cooling Room adeptness acquisition
  • Cleanliness Pure Water Production Line are strict
  • Arrangement of advice Fiber PLC Splitter
  • match up with multiple perimeter positions
  • ask about the current redshirts’ gameday workouts
  • campaign got off to a smashing start Friday when KU alumnus
  • d recruit your brains out to land a kid only to discover
  • cheap nike
  • cheap pandora charms sale
  • lingerie bra and panties
  • Wholesale Sexy Underwear
  • Wholesale Bikini
  • Wholesale Babydoll Lingerie 
  • Les pointeurs laser sont-ils dangereux pour les pilotes?
  • which puts a great emphasis on developing running communities
  • pandora in with
  • Nike air max 90
  • And pandora rings sale Bernie Taupin
  • Consumers therefore buy disney pandora charms Pandora bracelets
  • Pandora Beads pandora charms sale Jewelry stand
  • Pandora dark-colored friday product field
  • The Nike Dunks really play an essential part in Nike job
  • The best place to store your Pandora bracelets are in a plastic bag
  • copper winding wire manufacturer: http://www.xinyu-enameledwire.com/
  • Ugg shoes online are much convenient for you
  • You Know How to Make Pandora Beads?
  • For the hottest days of Black Friday Pandora's style
  • If you think about it the opportunities are endless with this particular.
  • Pandora Far east Brand new Yr 2018
  • Pokemon Mega
  • Nba 2k18 - Dead or Alive?
  • PANDORA
  • Oakland A's 2017 Participant Profile: Ryon Healy
  • How in direction of Weave a Tank
  • Marco Estrada will come at Toronto Blue Jays spring exercising within (rather) total physical fitness: I not within just agony
  • Terrerobytes: Notes towards notes towards SoxFest
  • Definitions of Rocket League
  • Top Sports Tips For Playing Great Madden Mobile
  • Pandora's immense growth as being a company
  • Nike Huarache super pas cher
  • 海賊王online
  • Hudon allows Canadiens pound Senators 8-3 (October 30, 2017)
  • Go Solar Energy With To Your House Solar Panels
  • Madden NFL coins on PS4 by aoaue
  • The Death of Runescape Agility
  • Want To Play Madden Mobile? Great Tips To Get You Started
  • kitchensink
  • adidas Nmd Mens Superstar
  • Adidas nmd sale uk
  • How to buy the latest burst of sports shoes Nike during the event
  • Many of you realize solutions to that temporary
  • Sunday matinee: FSU basketball performs Tulane within Tampa
  • Use Xinyu Enamelled Wire computer monitors
  • rovulevanos
  • The 5-Minute Rule for Sto Admiral Uniform
  • Sword Art Mobile Game is Waiting for You at The Lastest Server!
  • goldengoosepsg
  • goldensaldit
  • Dribbling Isn't Enough - Great Tips To Improve NBA 2K18 Skills
  • this is the matter of personal impression
  • Fashion Designing
  • How to Choose Path of Exile
  • Fashion Street Mirraw
  • http://www.wellness786.com/instantly-vivid/
  • 2018 brand-new Pandora jewelry string
  • kopenaccu
  • SHOPPING
  • goldengoosenewe
  • goldengooserafe
  • The 2016 Bluebird Banter Ultimate 40 Potential clients:6-10
  • NHL Exchange Rumor: Brent Seabrook Upon BlackhawksTrade Block
  • Sport 1 recap Charlie Lindgren propels St. John in direction of 1-0 sequence add
  • Capsule physical appearance at supreme 10 options inside Primary League Baseball draft
  • Wednesday Caps Clips: Capitals @ Maple Leafs Video game 4 Video game Working day
  • Chicago BlackhawksJoel Quenneville At present Longest-Tenured NHL Train
  • bqnvalengoose
  • go shopping
  • Ananya Jain
  • What are advantages of building curtain wall?
  • jerseys
  • Bridal Salwar Suits Every Woman must Have in her Wardrobe
  • tissot watch
  • Buying DC Universe Online Gold Mmocs Is The First Choice
  • valentinosob
  • store adidas NMD R1 web
  • goldengoosekezam
  • Adidas sneakers engineering advantages
  • valentinosaho
  • ns were outshot 34-20 by the Czech Republic and co
  • Independent Escorts in Gurugram
  • makemyorders
  • us grow Terence Garvin Seahawks Jersey
  • Microsoft's Valentino
  • Tampa pastor makes use of house of worship symptoms with supporting Super
  • Are actually Jaromir Jagr's Panthers going to your Tremendous Toilet bowl
  • Second-half problems to your Mn Crazy
  • Nashville Potential predators or innovators PK
  • Islanders retain it all alongside one another commencing matchup
  • buy cheap
  • Ordinary women trove flux
  • Valentino Outlet takegoldensale
  • Mythic Fantasy, H5 Web Game at InstantFuns
  • Best Eleven: World Cup 2018
  • Burning locate Billy Ellington loitering playoffs throughout a prospect coming summer
  • Rozier lots of 33 credit card account Boston celtics jiggle created by Nobleman, 104-93
  • Vacation trips terminate 21-point death, surprise bringing Cavaliers 116-98
  • 刀劍神域Online
  • Glorious Saga
  • 1987 Studio
  • Escape Room Prop

Find results in...

Find results that contain...


Date Created

  • Start

    End


Last Updated

  • Start

    End


Filter by number of...

Joined

  • Start

    End


Group


Found 397 results

  1. تارے ویکھن بیہہ جاندی اے جھلی جہی تارے ویکھن بیہہ جاندی اے جھلی جہی کلّم کلّی رہ جاندی اے جھلی جہی توں محرم تے توں ای غیر، پرایا ایں کیہ کج مینوں کہہ جاندی اے جھلی جہی اُس دا مکھڑا درداں رج سجایا اے دکھڑے سارے سہہ جاندی اے جھلی جہی جیڑھی گل میں سُنن میں جاواں اوہ چھڈ کے ساریاں گلّاں کہہ جاندی اے جھلّی جہی تیری یاد دی کوئل میریاں سوچاں دی کندھاں اُتّے بیہہ جاندی اے جھلی جہی چھڈ دیندی ہے جد وہ کملی ہتھ میرا راہواں دے وچ ڈیہہ جاندی اے جھلی جہی انج تے دکھڑے مُکنے دا نئیں ناں لیندے دکھاں دے نل کھیہ جاندی اے جھلّی جہی مینوں تے اوہ اگّے لائی رکھدی اے آپے پچھے رہ جاندی اے جھلّی جہی اک واری جے اداسی آ جاوے روح دے اندر بیہہ جاندی اے جھلّی جہی Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  2. تیڈے نین چُماں ، کونین چُماں مَیڈے وَس ہووے میں وَس پوواں، تیڈے پندھ چُماں، تیڈے پیر چُماں تیڈے راہ دی دُھوڑ دَھمال چُماں تیڈے نین چُماں ، کونین چُماں وِچ وسدی مُونجھ ملال چُماں تیڈے رنگ چُماں،تیڈی ونگ چُماں تیڈیں پَلکیں دی پَنڑِیال چُماں تیڈے سر دا ہک ہک وال چُماں چُم ڈیکھاں سِیندھ سَیندور بھری تیکوں بَنڑ کے "باکروال" چُماں مَیڈی لُوں لُوں لُہندی لَمس تیڈا نَس نَس دے ڈیوے بال چُماں مَیڈی لُوں لُوں لَکھ لَکھ لَب ھُوون بے اَنت لَباں دے نال چُماں Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  3. سہمی ہوئی ہے جھونپڑی بارش کےخوف سے محلوں کی آرزو ہے کہ ....... برسات تیز ہو Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  4. جیسا بھی مل گیا ہمیں ویسا پہن لیا دریا نے کل جو چپ کا لبادہ پہن لیا پیاسوں نے اپنے جسم پہ صحرا پہن لیا وہ ٹاٹ کی قبا تھی کہ کاغذ کا پیرہن جیسا بھی مل گیا ہمیں ویسا پہن لیا فاقوں سے تنگ آئے تو پوشاک بیچ دی عریاں ہوئے تو شب کا اندھیرا پہن لیا گرمی لگی تو خود سے الگ ہو کے سو گئے سردی لگی تو خود کو دوبارہ پہن لیا بھونچال میں کفن کی ضرورت نہیں پڑی ہر لاش نے مکان کا ملبہ پہن لیا بیدل لباسِ زیست بڑا دیدہ زیب تھا اور ہم نے اس لباس کو الٹا پہن لیا Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  5. جھیل میں گرتے ہوئے بھی دیکھ مرجھا کے کالی جھیل میں گرتے ہوئے بھی دیکھ سورج ہوں میرا رنگ مگر دن ڈھلے بھی دیکھ کاغذ کی کترنوں کو بھی کہتے ہیں لوگ پھول رنگوں کا اعتبار ہی کیا سونگھ کے بھی دیکھ ہر چند راکھ ہو کے بکھرنا ہے راہ میں جلتے ہوئے پروں سے اڑا ہوں مجھے بھی دیکھ دشمن ہے رات پھر بھی ہے دن سے ملی ہوئی صبحوں کے درمیان ہیں جو فاصلے بھی دیکھ عالم میں جس کی دھوم تھی اس شاہکار پر دیمک نے جو لکھے کبھی وہ تبصرے بھی دیکھ تو نے کہا نہ تھا کہ میں کشتی پہ بوجھ ہوں آنکھوں کو اب نہ ڈھانپ مجھے ڈوبتے بھی دیکھ اس کی شکست ہو نہ کہیں تیری بھی شکست یہ آئنہ جو ٹوٹ گیا ہے اسے بھی دیکھ تو ہی برہنہ پا نہیں اس جلتی ریت پر تلووں میں جو ہوا کے ہیں وہ آبلے بھی دیکھ بچھتی تھیں جس کی راہ میں پھولوں کی چادریں اب اس کی خاک گھاس کے پیروں تلے بھی دیکھ کیا شاخ با ثمر ہے جو تکتا ہے فرش کو نظریں اٹھا شکیبؔ کبھی سامنے بھی دیکھ Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  6. عشق آفت ، عشق آتش عشق آفت ، عشق آتش ، عشق مطلوبِ خدا عشق مجنوں ، عشق لیلٰی، عشق فریاد و صدا عشق باطن ، عشق ظاہر ، عشق تمثیلِ الٰہ عشق ساکن ، عشق جاری ، عشق ہمنام خدا عشق باقی ، عشق ساقی ، عشق معنٰئ عطا عشق فرہاد ، عشق شیریں ، عشق بارانِ شفا عشق طاقت ، عشق طلعت ، عشق تاثیرِ حیا عشق جلنا ، عشق مرنا ، عشق دردوں کی دوا عشق مالک ، عشق صاحب ، عشق انوارِ خدا عشق اوّل ، عشق آخر ، عشق ساحل باخدا Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  7. تم نہیں ہو تو ایسا لگتا ہے تم نہیں ہو تو ایسا لگتا ہے جیسے ویراں ہو رہ گزارِحیات جیسے خوابوں کے رنگ پھیکے ہوں جیسے لفظوں سے موت رِستی ہو جیسے سانسوں کے تار بکھرے ہوں جیسے نو حہ کناں ہو صبح چمن تم نہیں ہو تو ایسا لگتا ہے جیسے خوشبو نہیں ہو کلیوں میں جیسے سُونا پڑا ہو شہرِ دل جیسے کچھ بھی نہیں ہو گلیوں میں جیسے خوشیوں سے دشمنی ہو جائے جیسے جذبوں سے آشنائی نہ ہو تم نہیں ہو تو ایسا لگتا ہے جیسے اک عمر کی مسافت پر بات کچھ بھی سمجھ نہ آئی ہو جیسے چپ چپ ہوں آرزو کے شجر جیسے رک رک کے سانس چلتی ہو جیسے بے نام ہو دعا کا سفر جیسے قسطوں میں عمر کٹتی ہو تم نہیں ہو تو ایسا لگتا ہے جیسے اک خوف کے جزیرے میں کوئی آواز دے کے چھپ جائے جیسے ہنستے ہوئے اچانک ہی غم کی پروا سے آنکھ بھر جائے تم نہیں ہو تو ایسا لگتا ہے Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  8. تتلیوں کی بے چینی تتلیوں کی بے چینی آ بسی ہے پاؤں میں ایک پَل کو چھاؤں میں اور پھر ہَواؤں میں جن کے کھیت اور آنگن ایک ساتھ اُجڑتے ہیں کیسے حوصلے ہوں گے اُن غریب ماؤں میں صورتِ رفو کرتے سر نہ یوں کھُلا رکھتے جوڑ کب نہیں ہوتے ماؤں کی رداؤں میں آنسوؤں میں کٹ کٹ کر کتنے خواب گرتے ہیں اِک جوان کی میّت آ رہی ہے گاؤں میں اب تو ٹوٹی کشتی بھی آگ سے بچاتے ہیں ہاں کبھی تھا نام اپنا بخت آزماؤں میں ابر کی طرح ہے وہ یوں نہ چھُو سکوں لیکن ہاتھ جب بھی پھیلائے آ گیا دعاؤں میں جگنوؤں کی شمعیں بھی راستے میں روشن ہیں سانپ ہی نہیں ہوتے ذات کی گپھاؤں میں صرف اِس تکبُّر میں اُس نے مجھ کو جیتا تھا ذکر ہو نہ اس کا بھی کل کو نا رساؤں میں کوچ کی تمنّا میں پاؤں تھک گئے لیکن سمت طے نہیں ہوتی پیارے رہنماؤں میں اپنی غم گُساری کو مشتہر نہیں کرتے اِتنا ظرف ہوتا ہے درد آشناؤں میں اب تو ہجر کے دُکھ میں ساری عُمر جلنا ہے پہلے کیا پناہیں تھیں مہرباں چتاؤں میں ساز و رخت بھجوا دیں حدِّ شہر سے باہر پھر سُرنگ ڈالیں گے ہم محل سراؤں میں Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  9. خون اپنا ہو یا پرایا ہو نسلِ آدم کا خون ہے آخر جنگ مشرق میں ہو کہ مغرب میں امنِ عالم کا خون ہے آخر بم گھروں پر گریں کہ سرحد پر روحِ تعمیر زخم کھاتی ہے کھیت اپنے جلیں کہ اوروں کے زیست فاقوں سے تلملاتی ہے ٹینک آگے بڑھیں کہ پیچھے ہٹیں کوکھ دھرتی کی بانجھ ہوتی ہے فتح کا جشن ہو کہ ہار کا سوگ زندگی میّتوں پہ روتی ہے جنگ تو خود ہی ایک مسئلہ ہے جنگ کیا مسئلوں کا حل دے گی آگ اور خون آج بخشے گی بھوک اور احتیاج کل دے گی اس لئے اے شریف انسانو! جنگ ٹلتی رہے تو بہتر ہے آپ اور ہم سبھی کے آنگن میں شمع جلتی رہے تو بہتر ہے برتری کے ثبوت کی خاطر خوں بہانا ہی کیا ضروری ہے گھر کی تاریکیاں مٹانے کو گھر جلانا ہی کیا ضروری ہے جنگ کے اور بھی تو میداں ہیں صرف میدانِ کشت وخوں ہی نہیں حاصلِ زندگی خِرد بھی ہے حاصلِ زندگی جنوں ہی نہیں آؤ اس تیرہ بخت دنیا میں فکر کی روشنی کو عام کریں امن کو جن سے تقویت پہنچے ایسی جنگوں کا اہتمام کریں جنگ، وحشت سے بربریّت سے امن، تہذیب و ارتقا کے لئے جنگ، مرگ آفریں سیاست سے امن، انسان کی بقا کے لئے جنگ، افلاس اور غلامی سے امن، بہتر نظام کی خاطر جنگ، بھٹکی ہوئی قیادت سے امن، بے بس عوام کی خاطر جنگ، سرمائے کے تسلّط سے امن، جمہور کی خوشی کے لئے جنگ، جنگوں کے فلسفے کے خلاف امن، پُر امن زندگی کے لئے (ساحر لدھیانوی) Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  10. وہ مجھ سے ستاروں کا پتہ پوچھ رہا ہے عورت ہوں مگر صورت کہسار کھڑی ہوں اک سچ کے تحفظ کے لیے سب سے لڑی ہوں وہ مجھ سے ستاروں کا پتہ پوچھ رہا ہے پتھر کی طرح جس کی انگوٹھی میں جڑی ہوں الفاظ نہ آواز نہ ہم راز نہ دم ساز یہ کیسے دوراہے پہ میں خاموش کھڑی ہوں اس دشت بلا میں نہ سمجھ خود کو اکیلا میں چوب کی صورت ترے خیمے میں گڑی ہوں پھولوں پہ برستی ہوں کبھی صورت شبنم بدلی ہوئی رت میں کبھی ساون کی جھڑی ہوں Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  11. مُحبت یَاد رَکھتـــــی ہے مُحبت خُود بَتاتـــــــــی ہے کَـــہاں کِس کَا ٹِھکَانـــہ ہے کِسے آنکھوں میں رَکھنا ہے کِسے دِل مِیں بَــــــــسانا ہے رِہا کَرنا ہے کِـــــس کو کِسے زَنجیر کَــــرنا ہے مِٹَانا ہـے کِسے دِل سے کِسے تِحرِیر کَـــرنا ہے گَھرَوندَا کَب گِرَانا ہے کَـــہاں تَعمِیر کَرنا ہے اِسے مَعــــلوم ہَوتا ہے سَفر دُشـــوَار کِتنا ہے کِسی کی چَشمِ گِریہٴ میں چُھپا اِقــــــــــــرَار کِتنا ہے شَجر جَو گــــــِرنے وَالا ہے وُہ سَایــــــــــہ دَار کِتنا ہے سَفر کـی ہَر صَعوبَت اور تَمازَت یَاد رَکھتِــــــی ہے جِسے ســَارے بُھلا ڈَالیں مُحبت یَاد رَکھتـــــی ہے Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  12. بھوک و افلاس ....کی ماری ہوئی اس دنیا میں عشق ہی صرف حقیقت نہیں ، کچھ اور بھی ہے Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  13. تم کو وحشت تو سکھا دی ہے تم کو وحشت تو سکھا دی ہے، گزارے لائق اور کوئی حکم،؟ کوئی کام،؟ ہمارے لائق،؟ معذرت! میں تو کسی اور کے مصرف میں ہوں ڈھونڈ دیتا ہوں مگر کوئی،،،،،،،، تمہارے لائق ایک دو زخموں کی گہرائی اور آنکھوں کے کھنڈر اور کچھ خاص نہیں مجھ میں،،،،،،، نظارے لائق گھونسلہ، چھاؤں، ہرا رنگ، ثمر، کچھ بھی نہیں دیکھ،،،،،، مجھ جیسے شجر ہوتے ہیں آرے لائق دو وجوہات پہ،،،،،،، اس دل کی اسامی نہ ملی ایک-> درخواست گزار اتنے؛ دو-> سارے لائق اس علاقے میں اجالوں کی جگہ کوئی نہیں صرف پرچم ہے یہاں،،،،، چاند ستارے لائق مجھ نکمے کو چنا اس نے ترس کھا کے ! دیکھتے رہ گئے حسرت سے، بچارے لائق Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  14. میرے بے خبر تُجھے کیا پتا تيری آرزوں کے دوش پر تيری کيفِيت کے جام میں میں جو کِتنی صديوں سے قید ہوں تيرے نقش میں، تيرے نام میں میرے زاِئچے، میرے راستے میرے ليکھ کی یہ نِشانِياں تيری چاہ میں ہیں رُکی ہوئی کبھی آنسوں کی قِطار میں کبھی پتھروں کے حِصار میں کبھی دشتِ ہجر کی رات میں کبھی بدنصيبی کی گھاٹ میں کئی رنگ دھوپ سے جل گئے کئی چاند شاخ سے ڈھل گئے کئی تُن سُلگ کے پگھل گئے تيری اُلفتوں کے قیام میں تيرے درد کے در و بام میں کوئی کب سے ثبتِ صليب ہے تيری کائنات کی رات میں تيرے اژدھام کی شام میں تُجھے کیا خبر تُجھے کیا پتا میرے خواب ميری کہانیاں میرے بے خبر تُجھے کیا پتا !!!!! [gallery640x480] [photo=https://i.imgflip.com/2ahvbo.jpg]Sad Boy[/photo] [photo=https://www.storemypic.com/images/2016/11/23/where-are-you-sad-db126.gif]Where are you[/photo] [photo=https://encrypted-tbn0.gstatic.com/images?q=tbn:ANd9GcTGYjRG46MgKWl5uZLiwFciUJes0_Jlc6mQ_9JA_U-6xdYdLt3K]Sad Urdu Poetry[/photo] [/gallery] Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  15. عشق میں ضبط کا یہ بھی کوئی پہلو ہو گا جو میری آنکھ سے ٹپکا، تیرا آنسو ہو گا ایک پَل کو تیری یاد آئے تو مَیں سوچتا ہوُں خواب کے دشت میں بھٹکا ہوُا آہُو ہو گا تجھ کو محسوس کروں، مس نہ مگر کر پاؤں کیا خبر تھی کہ تو اِک پیکرِ خوشبو ہو گا اب سمیٹا ہے تو پھر مُجھ کو ادھُورا نہ سمیٹ زیرِ سر سنگ نہ ہو گا، میرا بازُو ہو گا مجھ کو معلوُم نہ تھی ہجر کی یہ رمز، کہ توُ جب میرے پاس نہ ہو گا تو ہر سُو ہو گا اِس توقّع پہ مَیں اب حشر کے دن گِنتا ہوُں حشر میں، اور کوئی ہو کہ نہ ہو، تُو ہو گا احمد ندیم قاسمی Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  16. ساتھ چلتے جا رہے ہیں ساتھ چلتے جا رہے ہیں پاس آ سکتے نہیں اک ندی کے دو کناروں کو ملا سکتے نہیں دینے والے نے دیا سب کچھ عجب انداز سے سامنے دنیا پڑی ہے اور اٹھا سکتے نہیں اس کی بھی مجبوریاں ہیں میری بھی مجبوریاں روز ملتے ہیں مگر گھر میں بتا سکتے نہیں کس نے کس کا نام اینٹوں پر لکھا ہے خون سے اشتہاروں سے یہ دیواریں چھپا سکتے نہیں راز جب سینے سے باہر ہو گیا اپنا کہاں ریت پر بکھرے ہوئے آنسو اٹھا سکتے نہیں آدمی کیا ہے گزرتے وقت کی تصویر ہے جانے والے کو صدا دے کر بلا سکتے نہیں شہر میں رہتے ہوئے ہم کو زمانہ ہو گیا کون رہتا ہے کہاں کچھ بھی بتا سکتے نہیں اس کی یادوں سے مہکنے لگتا ہے سارا بدن پیار کی خوشبو کو سینے میں چھپا سکتے نہیں پتھروں کے برتنوں میں آنسووں کو کیا رکھیں پھول کو لفظوں کے گملوں میں کھلا سکتے نہیں بشیر بدر Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  17. آؤ ذکر کریں آؤ ذکر کریں کچھ لمحوں کا اک چائے پیئں' اک چائے جيئں اک مگ ھو بھاپ اُڑاتا ھوا اک مگ ھو ساتھ نبھاتا سا کچھ مدھم سى سرگوشی میں بس ھوا کى آہٹ آتى ھو کچھ تم چپ ھو کچھ میں نہ کہوں بس ھم تم ھوں دو مگ شگ ھوں کچھ دھواں دھواں سا اٹھتا ھو اور سامنے رکھے عشق کے مگ يعنى چائے کے مگ اک گھونٹ بھریں دو سانس رکيں پل دو پل میں صدياں گزریں آؤ ذکر کریں آؤ چائے پیئں میری چائے میں تیرتے پتى کے کچھ دانے شانے سير پہ ھوں تیرى چائے میں ميٹھا رقص پہ ھو میری چائے کو تیرى نٹھ کھٹ سے تھوڑا دور رکھوں حل چل نہ ھو گڑ بڑ نہ ھو تیرى چائے کو اتنى خبر بھى ھو میری چائے کو میٹھا پسند نہیں تیرى چائے کا رنگ تھوڑا گہرا ہے تھوڑا ٹھہرا ہے میری چائے کا رنگ بڑا گدلا سا کچھ گاڑھا سا تھوڑا کڑوا سا میں سپ سپ کر کے جان بھروں تم گھونٹ گھونٹ میں ختم کرو ديکھو صبر کرو يہ چائے ھے... کونسا گھڑياں ہیں؟ کہ ختم کرو... تھوڑا صبر کرو چلو چھوڑو اب یہ نوک جھونک باتیں شاتيں کہيں تھک نہ جائیں خاموشى کى زباں میں بول کے ھم اور چائے آؤ چائے پیئں آؤ ذکر کریں کچھ دیر اس دنیا سے کٹ کر بس اپنی اپنی بات کریں تیرى گمشدگی مجھے راس نہیں آؤ اک دوجے میں سو جائیں آؤ چائے پیئں اور کھو جائیں کوئی رقص ھو بسمل بسمل سا کوئی تال بجے،،،کسى ساز پہ ھم دو چائے کے آخرى گھونٹ بھریں صدياں جى ليں دنیا بھوليں آؤ چائے پیئں Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  18. ﺗﻢ ﻧﮧ ﺑﯿﭩﮭﻮ ﮨﻤﺎﺭﯼ ﺻﺤﺒﺖ ﻣﯿﮟ ﺗﺨﺖ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﻮ ﺗﺎﺝ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﻮ ﯾﮧ ﺑﺘﺎﻭ ! ﮐﮧ ﻻﺝ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﻮ؟ ﺗﻢ ﻧﮧ ﺑﯿﭩﮭﻮ ﮨﻤﺎﺭﯼ ﺻﺤﺒﺖ ﻣﯿﮟ ﺗﻢ ﺫﺭﺍ ﮐﺎﻡ ﮐﺎﺝ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﻮ ﻭﺍﻗﻌﮯ ﮐﺎ ﺑﮭﯽ ﻋﻠﻢ ﮨﮯ ﮐﻮﺋﯽ؟ ﯾﺎ ﻓﻘﻂ ﺍﺣﺘﺠﺎﺝ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﻮ ﮨﮯ ﻣﺮﻭّﺕ ﺑﮭﯽ ﮐﻮﺋﯽ ﭼﯿﺰ ﮐﮧ ﺗﻢ ﭼَﮭﻠﻨﯽ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﻮ ﭼﮭﺎﺝ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﻮ ﺍﺱ ﻟﯿﮯ ﺩﻭ ﮔﮭﮍﯼ ﮐﻮ ﺑﯿﭩﮫ ﮔﯿﺎ ﭘﯿﺎﺭ ﻭﺍﻟﮯ ! ﻣﺰﺍﺝ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﻮ ﺍُﻥ ﻏﻤﻮﮞ ﮐﺎ ﻋﻼﺝ ﮨﮯ ﮨﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﺟﻦ ﻏﻤﻮﮞ ﮐﮯ ﻋﻼﺝ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﻮ ﯾﺎﺭ ﯾﮧ ﺟﺎﻥ ﮐﺮ ﮨﻮﺍ ﮨﮯ ﺩﮐﮫ ﯾﺎﺭ ﺗﻢ ﺑﮭﯽ ﺳﻤﺎﺝ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﻮ ﺍﻧﮕﻠﯿﻮﮞ ﭘﺮ ﻧﭽﺎ ﺭﮨﮯ ﮨﻮ، ﻭﺍﮦ ﮨﺎﮞ ، ﺩﻟﻮﮞ ﭘﺮ ﺟﻮ ﺭﺍﺝ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﻮ ﮨﻢ ﮨﯿﮟ ﺳﺎﺣﺮ ﻏﺮﯾﺐ ﺑﺪ ﺗﮩﺬﯾﺐ ﺍﻭﺭ ﺗﻢ ﺗﻮ ﺍﻧﺎﺝ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﻮ Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  19. بہت ہی مان ہے تم پر بہت ہی مان ہے تم پر سنو پاسِ وفا رکھنا سبھی سے تم ملو لیکن ذرا سا فاصلہ رکھنا بچھڑ جانا بھی تو پڑتا ہے ذرا سا حوصلہ رکھنا وہ سارے وصل کے لمحے تم آنکھوں میں سجا رکھنا ابھی تو امکان باقی ہے ابھی لب پہ دعا رکھنا بہت نایاب ہیں دیکھو ہمیں سب سے جدا رکھنا Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  20. تمہارا ہجر منا لوں اگر اجازت ہو میں دل کسی سے لگا لوں اگراجازت ہو تمہارے بعد بھلا کیا ہیں وعدہ و پیماں بس اپنا وقت گنوا لوں اگر اجازت ہو تمہارے ہجر کی شب ہائے کار میں جاناں کوئی چراغ جلا لوں اگر اجازت ہو جنوں وہی ہے، وہی میں، مگر ہے شہر نیا یہاں بھی شور مچا لوں اگر اجازت ہو کسے ہے خواہشِ مرہم گری مگر پھر بھی میں اپنے زخم دکھا لوں اگر اجازت ہو تمہاری یاد میں جینے کی آرزو ہے ابھی کچھ اپنا حال سنبھالوں اگر اجازت ہو جون ایلیا Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  21. WaQaS DaR

    Dard e tanhai

    اب جو بچھڑے ہیں تو احساس ہوا ہے ہم کو درد کیا ہوتا ہے تنہائی کسے کہتے ہیں چار سو گونجتی رسوائی کسے کہتے ہیں اب جو بچھڑے ہیں تو احساس ہوا ہے ہم کو کوئی لمحہ ہو تِری یاد میں کھو جاتے ہیں اب تو خود کو بھی میسر نہیں آپاتے ہیں رات ہو دن ہو ترے پیار میں ہم بہتے ہیں درد کیا ہوتا ہے تنہائی کسے کہتے ہیں اَب جو بچھڑے ہیں تو احساس ہوا ہے ہم کو جو بھی غم آئے اُسے دل پہ سہا کرتے تھے ایک وہ وقت تھا ہم مل کے رہا کرتے تھے اب اکیلے ہی زمانے کے ستم سہتے ہیں درد کیا ہوتا ہے تنہائی کسے کہتے ہیں اب جو بچھڑے ہیں تو احساس ہوا ہے ہم کو ہم نے خوداپنے ہی رستے میں بچھائے کانٹے گھر میں پھولوں کی جگہ لاکے سجائے کانٹے زخم اس دِل میں بسائے ہوئے خود رہتے ہیں درد کیا ہوتا ہے تنہائی کسی کہتے ہیں اب جو بچھڑے ہیں تو احساس ہوا ہے ہم کو یوں تو دنیا کی ہر اک چیزحسیں ہوتی ہے پیار سے بڑھ کے مگر کچھ بھی نہیں ہوتی ہے راستہ روک کے ہر اک سے یہی کہتے ہیں اب جو بچھڑے ہیں تو احساس ہوا ہے ہم کو درد کیا ہوتا ہے تنہائی کسے کہتے ہیں چار سو گونجتی رسوائی کسے کہتے ہیں اب جو بچھڑے ہیں تو……….!! Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  22. ہم نے تری خاطر سے دل زار بھی چھوڑا تو بھی نہ ہوا یار اور اک یار بھی چھوڑا کیا ہوگا رفوگر سے رفو میرا گریبان اے دست جنوں تو نے نہیں تار بھی چھوڑا دیں دے کے گیا کفر کے بھی کام سے عاشق تسبیح کے ساتھ اس نے تو زنار بھی چھوڑا گوشہ میں تری چشم سیہ مست کے دل نے کی جب سے جگہ خانۂ خمار بھی چھوڑا اس سے ہے غریبوں کو تسلی کہ اجل نے مفلس کو جو مارا تو نہ زردار بھی چھوڑا ٹیڑھے نہ ہو ہم سے رکھو اخلاص تو سیدھا تم پیار سے رکتے ہو تو لو پیار بھی چھوڑا کیا چھوڑیں اسیران محبت کو وہ جس نے صدقے میں نہ اک مرغ گرفتار بھی چھوڑا پہنچی مری رسوائی کی کیونکر خبر اس کو اس شوخ نے تو دیکھنا اخبار بھی چھوڑا کرتا تھا جو یاں آنے کا جھوٹا کبھی اقرار مدت سے ظفرؔ اس نے وہ اقرار بھی چھوڑا www.fundayforum.com Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  23. دیکھو انساں خاک کا پتلا بنا کیا چیز ہے بولتا ہے اس میں کیا وہ بولتا کیا چیز ہے روبرو اس زلف کے دام بلا کیا چیز ہے اس نگہ کے سامنے تیر قضا کیا چیز ہے یوں تو ہیں سارے بتاں غارتگر ایمان و دیں ایک وہ کافر صنم نام خدا کیا چیز ہے جس نے دل میرا دیا دام محبت میں پھنسا وہ نہیں معلوم مج کو ناصحا کیا چیز ہے ہووے اک قطرہ جو زہراب محبت کا نصیب خضر پھر تو چشمۂ آب بقا کیا چیز ہے مرگ ہی صحت ہے اس کی مرگ ہی اس کا علاج عشق کا بیمار کیا جانے دوا کیا چیز ہے دل مرا بیٹھا ہے لے کر پھر مجھی سے وہ نگار پوچھتا ہے ہاتھ میں میرے بتا کیا چیز ہے خاک سے پیدا ہوئے ہیں دیکھ رنگا رنگ گل ہے تو یہ ناچیز لیکن اس میں کیا کیا چیز ہے جس کی تجھ کو جستجو ہے وہ تجھی میں ہے ظفرؔ ڈھونڈتا پھر پھر کے تو پھر جا بجا کیا چیز ہے Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  24. اتنا نہ اپنے جامے سے باہر نکل کے چل دنیا ہے چل چلاؤ کا رستہ سنبھل کے چل کم ظرف پر غرور ذرا اپنا ظرف دیکھ مانند جوش غم نہ زیادہ ابل کے چل فرصت ہے اک صدا کی یہاں سوز دل کے ساتھ اس پر سپند وار نہ اتنا اچھل کے چل یہ غول وش ہیں ان کو سمجھ تو نہ رہ نما سائے سے بچ کے اہل فریب و دغل کے چل اوروں کے بل پہ بل نہ کر اتنا نہ چل نکل بل ہے تو بل کے بل پہ تو کچھ اپنے بل کے چل انساں کو کل کا پتلا بنایا ہے اس نے آپ اور آپ ہی وہ کہتا ہے پتلے کو کل کے چل پھر آنکھیں بھی تو دیں ہیں کہ رکھ دیکھ کر قدم کہتا ہے کون تجھ کو نہ چل چل سنبھل کے چل ہے طرفہ امن گاہ نہاں خانۂ عدم آنکھوں کے روبرو سے تو لوگوں کے ٹل کے چل کیا چل سکے گا ہم سے کہ پہچانتے ہیں ہم تو لاکھ اپنی چال کو ظالم بدل کے چل ہے شمع سر کے بل جو محبت میں گرم ہو پروانہ اپنے دل سے یہ کہتا ہے جل کے چل بلبل کے ہوش نکہت گل کی طرح اڑا گلشن میں میرے ساتھ ذرا عطر مل کے چل گر قصد سوئے دل ہے ترا اے نگاہ یار دو چار تیر پیک سے آگے اجل کے چل جو امتحان طبع کرے اپنا اے ظفرؔ تو کہہ دو اس کو طور پہ تو اس غزل کے چل Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)
  25. اس گلی کے لوگوں کو منہ لگا کے پچھتائے ایک درد کی خاطر کتنے درد اپنائے تھک کے سو گیا سورج شام کے دھندلکوں میں آج بھی کئی غنچے پھول بن کے مرجھائے ہم ہنسے تو آنکھوں میں تیرنے لگی شبنم تم ہنسے تو گلشن نے تم پہ پھول برسائے اس گلی میں کیا کھویا اس گلی میں کیا پایا تشنہ کام پہنچے تھے تشنہ کام لوٹ آئے پھر رہی ہیں آنکھوں میں تیرے شہر کی گلیاں ڈوبتا ہوا سورج پھیلتے ہوئے سائے جالبؔ ایک آوارہ الجھنوں کا گہوارہ کون اس کو سمجھائے کون اس کو سلجھائے Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)