Sign in to follow this  
  • entries
    452
  • comments
    2
  • views
    32,863

شاخِ مِژگانِ محبّت پہ سجا لے مجھ کو

Sign in to follow this  
WaQaS DaR

430 views

شاخِ مِژگانِ محبّت پہ سجا لے مجھ کو برگِ آوارہ ہُوں، صرصر سے بچا لے مجھ کو رات بھر چاند کی ٹھنڈک میں سُلگتا ہے بدن کوئی تنہائی کے دَوزخ سے نکِالے مجھ کو مَیں تِری آنکھ سے ڈھلکا ہُوا اِک آنسو ہُوں تو اگر چاہے، بِکھرنے سے بچا لے مجھ کو شب غنیمت تھی ، کہ یہ زخم نظارہ تو نہ تھا ڈس گئے صُبحِ تمنّا کے اُجالے مجھ کو میں مُنقّش ہُوں تِری رُوح کی دِیواروں پر تو مِٹا سکتا نہیں بُھولنے والے مجھ کو تہہ بہ تہہ موج ِ طلب کھینچ رہی ہے، مُحسنؔ کوئی گرداب ِ تمنّا سے نِکالے مجھ کو محسن نقوی


Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)

Sign in to follow this  


0 Comments


Recommended Comments

There are no comments to display.

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now