Sign in to follow this  
  • entries
    437
  • comments
    2
  • views
    23,819

نگاہوں کے تصادم سے عجب تکرار کرتا ہے

Sign in to follow this  
WaQaS DaR

424 views

نگاہوں کے تصادم سے عجب تکرار کرتا ہے یقین کامل نہیں لیکن گماں ہے پیار کرتا ہے لرز جاتی ہوں میں یہ سوچ کر کہیں کافر نہ ہو جائوں دل اس کی پوجا پہ بڑا اصرار کرتا ہے اسے معلوم ہے شاید میرا دل ہے نشانے پر لبوں سے کچھ نہیں کہتا نظر سے وار کرتا ہے میں اس سے پوچھتی ہوں خواب میں مجھ سے محبت ہے پھر آنکھیں کھول دیتی ہوں وہ جب اظہار کرتا ہے پروین شاکر


Click to View the full poetry article at (fundayforum.com)

Sign in to follow this  


0 Comments


Recommended Comments

There are no comments to display.

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now