Sign in to follow this  
  • entries
    438
  • comments
    2
  • views
    25,916

intezaar

Sign in to follow this  
WaQaS DaR

215 views

انتظار

رات بھر دیدۂ نمناک میں لہراتے رہے

سانس کی طرح سے آپ آتے رہے، جاتے رہے

خوش تھے ہم اپنی تمناؤں کا خواب آئے گا

اپنا ارمان بر افگندہ نقاب آئے گا

نظریں نیچی کیے شرمائے ہوئے آئے گا

کاکلیں چہرے پہ بکھرائے ہوئے آئے گا

آ گئی تھی دلِ مضطر میں شکیبائی سی

بج رہی تھی مرے غم خانے میں شہنائی سی

پتیاں کھڑکیں تو سمجھا کہ لو آپ آ ہی گئے

سجدے مسرور کہ معبود کو ہم پا ہی گئے

شب کے جاگے ہوئے تاروں کو بھی نیند آنے لگی

آپ کے آنے کی اک آس تھی اب جانے لگی

صبح نے سیج سے اٹھتے ہوئے لی انگڑائی

او صبا! تو بھی جو آئی تو اکیلی آئی

میرے محبوب مری نیند اڑانے والے

میرے مسجود مری روح پہ چھانے والے

آ بھی جا تا کہ مرے سجدوں کا ارماں نکلے

آ بھی جا تا ترے قدموں پہ مری جاں نکلے

15171056_1169825423098457_9093930810289594230_n.jpg


Click to View the full article (fundayforum.com)

Sign in to follow this  


0 Comments


Recommended Comments

There are no comments to display.

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now