Sign in to follow this  
  • entries
    441
  • comments
    2
  • views
    28,292

Jaana

Sign in to follow this  
WaQaS DaR

230 views

سوچ کے کرنا کوئی ، پیمان جاناں 

وقت نہی رہتا سدا ، مہربان جاناں

 

موسم ، وقت ، قسمت سب تُم جیسے

کب بدل جائیں ، گردش دوران جاناں 

 

ممکن نہی ہے ہجرت ، روحِ قلوب سے 

دل وہ بِن بام و در کا ، زندان جاناں

 

صحرا ، دشت ، شب ، ہُو کا عالم

ہجر میں ہوا ہے دل ، بیابان جاناں 

 

اغراض ہوتے ہیں عنایتوں کے پیچھے

یونہی لوگ نہیں ہوتے مہربان جاناں

 

درخت پہ لکھے نام مٹ جاتے ہیں

کتنے ہی انمٹ ہوں ، نشان جاناں 

 

دو دن جواں رُت پہ زعم بے معنی 

کون رہا ہے عمر بھر جوان جاناں

 

کاروبار میں ہوتا ہے ، نفع در نفع 

عشق تو ہے سراسر نُقصان جاناں 

 

خوابِ مُحبت ہے ، سب خواب غفلت 

زندگی تو ہے سخت امتحان جاناں 

 

عشق عنوان ِ ہوس ہے دور جدید کا

بن جاتے ہیں لوگ اب حیوان جاناں 

 

ادائیگیِ سود و اصل کے ، باوجود 

عشق ادا کرتا ہے تاعمر لگان جاناں 

 

قید سے کب کہیں کوئی جا سکا

عشق مانگتا ہے ہونا قُربان جاناں 

 

ہجر مار ڈالے ، پتھر دلوں کو بھی

عاشق بھی تو ہیں ، انسان جاناں

 

آنکھ جھیل ، لب گُلاب ، قد دراز

سُنہری رنگت ، آبرو کمان جاناں

 

جہاں بتائے ، چند لمحے وصال کے

یاد کرتا ہے وہ ، کچّا مکان جاناں

 

میرے حال کی ہے تفسیر تیری 

زیرِ لب مچلتی ، مُسکان جاناں 

 

اظہار ہر بات کا لازم تو نہیں ہے

سمجھ دھڑکنوں کی زبان جاناں

 

love-315x157.jpg


Click to View the full article (fundayforum.com)

Sign in to follow this  


0 Comments


Recommended Comments

There are no comments to display.

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now